شگر عوام کی بےحسی یا عوامی نمائندوں کی غفلت



 شگر عوام کی بےحسی یا عوامی نمائندوں کی غفلت یا گلگت بلتستان حکومت کی ناکامی شئیر ضرور کیجۓگا جب سے گلگت بلتستان میں نگران حکومت کا دور شروع هوا اس دن سے لیکراب تک هر چیز بهران پیدا کیا هوا هے گندم آٹا تو نایاب هوچکا هے یہاں تک که ماہ رمضان مبارک میں غریبوں کے لئےیوٹیلٹی سٹورسے چینی تک بهی نصیب ناهوسکا هم تو خوش هوا تها شگر ضلع بن گیا لوگوں کو روذگار ملے گا کهانے کو روٹی ملےگا گندم کا کوٹہ بڑهے گا مگر اس کے برعکس تین لاکهہ بوری گلگت بلتستان کیئے کم کیا یوٹیلٹی سٹوروں پر صرف خراب هونے والے چاول کےعلاوه باقی چیزین نایاب هوچکا هے پیپلز پارٹی کو چور ڈاکو کہنے والوں نے آج حد ہی پار کردیا چوروں کے دورحکومت میں تو گندم آٹا چینی سب ملتا تها مگر ابهی آپ خود سوچے کیا یه سب ضروریات ذندگی کی چیزیں آپکو مل رہا هے اگر مل رہا هے تو میں معافی مانگنے کلئے تیار هوں میرا گزارش هے حکومت وقت سے جو ووٹ ن لیک کو ملا هے وه راجہ اعظم خان صاحب اور ضلع کی وجہ سے ملا هے ورنہ تو آپ خود سوچے لہذا عوامی مشکلات کو مد نظر رکهہ کر ان سب بهرانوں سے حل تلاش کرے جن چوروں نے یہ بهران پیدا کیا هے ان کے خلاف قانونی کاروائی کرےتو مہربانی