Search This Blog

ویب سائٹ برائے فروخت ہے

ویب سائٹ برائے فروخت ہے
ملین ویزیٹرز اور تمام سوشل میڈیا پروفائل اور پیچ کے ساتھ

GB

GB

Shigar

Shigar

Churkah

Churkah

غذر ضلع کی قرارداد کے معاملے پر ایوان میں گرما گرمی

گلگت(خصوصی رپورٹ)ضلع غذر میں ایک اضافی ضلع بنانے کے حوالے سے قرارداد کو دوبارہ ایوان میں بحث کیلئے پیش کرنے یا نہ کرنے کے حوالے سے قانون ساز اسمبلی کے اجلاس میں ہونے والے گرما گرم بحث کے بعد سپیکر فدا محمد ناشاد نے اپنے ریمارکس میں کہاکہ ضلع بنانے کے حوالے سے ایک پالیسی ہونی چاہیے اور ہربات کیلئے دلیل ہونی چاہیے یقیناًغذر میں ایک اضافی ضلع وہاں کے عوام کی ضرورت ہے مگر اس حوالے سے اجلاس کے بعد مشورہ کریں گے کہ قرار داد دوبارہ ایوا ن میں پیش ہونی چاہیے یاوزیراعظم سے با ت کرنی چاہیے اس سے قبل اجلاس کے دوران مسلم لیگ ن کے رکن اسمبلی فدا محمد خان نے گزشتہ اجلاس کی کارروائی کی شائع شدہ بک میں ضلع غذرمیں اضافی ضلع کی قرارداد کے حوالے سے لکھے گئے کلمات کے حوالے سے کہاکہ میری قرارداد معطل ہوئی ہے اسے دوبارہ ایوان میں پیش کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے دورے کے دوران مجھے جان بوجھ کر لاعلم رکھاگیا مگر اس کے باوجود میں عطا آباد پہنچا اور وہاں وزیراعظم سے ملاقات بھی کی مگر وزیراعلیٰ نے کہا کہ یہاں پر ضلع کی بات کرنا مناسب نہیں ہے ۔ انہوں نے کہاکہ یہاں کتاب میں لکھاگیا ہے کہ یاسین کو ضلع بنانے کی قرارداد پر بحث کی گنجائش نہیں ہے یہ غذر اور نشان حیدر کی توہین ہورہی ہے ۔ جعفر اللہ خان نے کہا کہ ہم نے غذر میں ایک اضافی ضلع کی کبھی مخالفت نہیں کی ہے ہنزہ نگر ،شگر اور کھرمنگ قراردادوں کی وجہ اضلاع نہیں بنے ہیں یہ اضلاع وزیر اعظم نے بنائے ہیں ۔تحریک انصاف کے راجہ جہانزیب خان نے کہا کہ وزیر اعظم کا دورہ ہم سے خفیہ رکھا گیا یاسین ضلع بننے کی مکمل شرائط رکھتا ہے مگر حکومت کی بدنیتی کی وجہ سے قرار داد منظور کرنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے ۔ یاسین کو ضلع بنانے کی قرارداد منظور کر کے وفاق بجھوانے میں کیا قباحت ہے ۔ اگر ممبران اس قرارداد کی مخالفت کریں گے تو اس کا علاج بھی ہمارے پاس ہے اور اس کا علاج سٹرکوں پر کریں گے حاجی رضوان علی نے کہا کہ ضلع غذر کے ممبران کا ایک وفد تشکیل دے کر وزیر اعظم سے ملاقات کرائی جائے نواز خا ن ناجی نے کہاکہ ناانصافیوں سے بدمزدگی پیدا ہوتی ہے انہوں نے کہا کہ گورننس آرڈر 2009جس نے بنایا ہے وہ غدار ہے اس میں ہم ترمیم بھی نہیں کرسکتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ایک لاکھ بیس ہزار آبادی والے ضلع دیامر میں اسمبلی کے چار حلقے ہیں جبکہ ایک لاکھ بیس ہزار کے غذر میں اسمبلی کے تین حلقے ہیں یہ ناانصافی نہیں ہے تو اور کیا ہے انہوں نے کہا کہ اسمبلی میں غذر کی نمائندگی کم کرنے کیلئے جان بوجھ کر حلقوں میں اضافہ نہیں کیاجارہاہے ۔وزیر جنگلات حاجی محمد وکیل نے کہا کہ داریل تانگیر کو ضلع بنانے کی قرارداد 2009میں اسمبلی سے منظور ہوئی مگر ابھی تک ضلع نہیں بنا ہے انہوں نے کہا کہ یہ ہمارے ساتھ امتیازی سلوک ہورہاہے اور زیادتی ہورہی ہے ہم مزید زیادتی برداشت نہیں کرسکتے ہیں وزیر اطلاعات وتعلیم حاجی ابراہیم ثنائی نے کہا کہ اگر شگر ، کھرمنگ ہنزہ اور نگر ضلع بن سکتے ہیں تو داریل تانگیر اور یاسین ضلع کیوں نہیں بن سکتے ہیں انہوں نے کہا کہ روندو اور ڈغونی کو بھی ضلع بنایا جائے انہوں نے کہاکہ تمام علاقوں کی آبادی اوررقبے کو مد نظر رکھتے ہوئے مزید اضلاع بنائے جائیں ۔ وزیر بلدیات فرمان علی نے کہا کہ وزیر اعظم کے دورے کے حوالے سے این ایچ اے نے تمام ممبروں کو دعوت نام بجھوایاتھا اورسب کے علم میں تھا کسی نے بھی وزیر اعظم کے دورے کو خفیہ نہیں رکھا تھا انہوں نے کہا کہ استور میں بھی ایک اضافی ضلع بنایا جائے استورمیں مزید تین اضلاع بنانے کی گنجائش مودجود ہے ۔ اگر یہ ممکن نہیں ہے تو استور میں قانون سازاسمبلی کی ایک نشست کا اضافہ کیا جائے اسلامی تحریک کے کیپٹن (ر) محمد شفیع نے کہا کہ غلطی بزنس ایڈوائزکمیٹی کی ہے اگر ضلع بنانے کی قرارداد پر اسمبلی میں بحث نہیں ہوسکتی تھی اسے ایوان میں پیش ہی کیوں کیا ۔ ایم ڈبلوی ایم کے کاچو امتیاز نے کہاکہ قانون ساز اسمبلی کی حلقہ بندیوں میں بڑی غلطیاں کی گئی ہیں مسلم لیگ ن کے حیدرخان نے کہا کہ داریل تانگیر کو ضلع بنانے کی کئی قرارداددیں منظور ہو چک یہیں مگر عمل نہیں ہورہا ہے انہوں نے کہا کہ جو اضلاع بنے ہیں وہ ہمارے لئے مثال ہیں ان کی آبادی اور رقبے کو مد نظر رکھتے ہوئے مزید اضلاع بنائیں جائیں انہوں نے کہا کہ مزید کتنے اضلاع کی ضرورت اس حوالے سے ایک مشترکہ قرارداد ایوان میں پیش کی جائے

Share on Google Plus

About GB NEWS ONE

This is a short description in the author block about the author. You edit it by entering text in the "Biographical Info" field in the user admin panel.