پاکستان کا مسلح ڈرون طیارے کا کامیاب تجربہ

آئی ایس پی آر کے مطابق ڈرون کے ذریعے داغے گئے لیزر گائیڈڈ میزائل نے کامیابی سے اپنے ہدف کو نشانہ بنایا

پاکستان نے ڈرون ’براق‘ اور لیز گائیڈیڈ میزائل ’برق‘ کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ یہ ڈورن مکمل طور ملکی سطح پر تیار کیا گیا ہے۔

پاکستان فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ آئی ایس پی آر کے سربراہ میجر جنرل عاصم باوجود نے ٹوئٹر پر جاری کردہ پیغام میں کامیاب تجربے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ڈرون کے ذریعے داغے گئے لیزر گائیڈڈ میزائل نے کامیابی سے اپنے ہدف کو نشانہ بنایا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ڈرون کے تجربے کے وقت فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف بھی موجود تھے۔ اس موقعے پر فوج کے سربراہ نے انجینیئروں، سائنس دانوں اور اس منصوبے سے منسلک تمام افراد کی کاوشوں کو سراہا۔

فوج کے سربراہ نے کہا کہ یہ پوری قوم کے لیے یادگار لمحہ ہے، جس سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی صلاحیت میں کئی گنا اضافہ ہوا ہے۔

یہ پوری قوم کے لیے یادگار لمحہ ہے جس سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی صلاحیت میں کئی گنا اضافہ ہو گا: آرمی چیف

پاکستان کے وزیراعظم نواز شریف نے کامیاب تجربے پر پاکستان فوج کو مبارک باد دی اور کہا کہ ڈرون کی صلاحیت ملکی دفاع میں اہم سنگِ میل کی حیثیت رکھتی ہے۔

اس سے پہلے پاکستان نے سٹیلتھ ٹیکنالوجی کے حامل ’رعد‘ نامی کروز میزائل کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ دفاعی ماہرین اسے پاکستان کی میزائل ٹیکنالوجی میں اہم پیش رفت قرار دے رہے ہیں۔

زمین سے زمین اور زمین سے سطح سمندر پر اہداف کو نشانہ بنانے کی دہری صلاحیت رکھنے والا یہ میزائل 350 کلومیٹر تک مار کر سکتا ہے۔