Search This Blog

ویب سائٹ برائے فروخت ہے

ویب سائٹ برائے فروخت ہے
ملین ویزیٹرز اور تمام سوشل میڈیا پروفائل اور پیچ کے ساتھ

GB

GB

Shigar

Shigar

Churkah

Churkah

برطانیہ نے سم کارڈ کمپنی کو ہیک کیا، ’پاکستانی موبائل کمپنیاں محفوظ رہیں‘

برطانیہ نے سم کارڈ کمپنی کو ہیک کیا، ’پاکستانی موبائل کمپنیاں محفوظ

برطانوی ایجنسی کے پاس پاکستانی موبائل کمپنیوں کے کوڈز بھی موجود تھے: دا انٹرسپیٹ
امریکی ویب سائٹ ’دا انٹرسیپٹ‘ کی ایک تازہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ امریکی اور برطانوی انٹیلیجنس ایجنسیوں نے فون کالز سننے کے لیے سِمیں بنانے والی کمپنی کے نیٹ ورک کو غیر قانونی طور پر ہیک کیا اور کوڈز چوری کر لیے۔
اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ برطانوی انٹیلیجنس ایجنسی نے 2010 کی پہلی سہ ماہی میں جیملٹو ناما کمپنی کا نیٹ ورک ہیک کیا اور کوڈز چوری کیے۔
رپورٹ کے مطابق برطانوی ایجنسی نے ایران، افغانستان، یمن، بھارت، سربیا، آئس لینڈ اور تاجکستان میں وائرلیس نیٹ ورک ہیک کیے اور فون کالز کو مانیٹر کیا۔
تاہم رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اگرچہ برطانوی ایجنسی کے پاس پاکستانی موبائل کمپنی موبی لنک اور ٹیلی نور کے کوڈز تھے لیکن وہ فون کالز سننے میں ناکام رہی۔
’اس کی وجہ یہ ہو سکتی ہے کہ پاکستانی کمپنیاں نیٹ ورکس اب زیادہ محفوظ طریقے استعمال کرتی ہیں۔‘
امریکی ویب سائٹ کے پاس یہ معلومات امریکی سی آئی اے کے سابق اہلکار ایڈورڈ سنوڈن کی جانب سے دی جانے والی خفیہ دستاویزات سے آئی ہیں۔
امریکی ویب سائٹ کے مطابق امریکہ اور برطانیہ دونوں ہی ان کوڈز کی چوری کے باعث دنیا کے زیادہ تر موبائل نیٹ ورکس پر فون کالز اور ڈیٹا مانیٹر کر سکتے ہیں۔
نیدرلینڈز کی سم بنانے والی کمپنی جیملٹو کی بنائی ہوئی سمیں اے ٹی اینڈ ٹی، ٹی موبائل، ویرازن اور سپرنٹ سمیت دنیا بھر کی لگ بھگ 450 موبائل کمپنیاں استعمال کرتی ہیں۔
Share on Google Plus

About GB NEWS ONE

This is a short description in the author block about the author. You edit it by entering text in the "Biographical Info" field in the user admin panel.